Header ADS

Header Ads

کرتار پور راہداری: پاکستان روزانہ 5ہزار یاتریوں کو گوردوارہ آنے کی اجازت دے گا

کرتارپور راہداری پر پاک بھارت اعلیٰ سطح کے مذاکرات چار ستمبر کو ہوں گے
کرتارپور راہداری پر پاک بھارت اعلیٰ سطح کے مذاکرات چار ستمبر کو ہوں گے۔ مذاکرات میں کرتارپور راہداری کھولنے کے حوالے سے دونوں ممالک کے درمیان معاہدے کے مسودے کو حتمی شکل دی جائے گی۔

کرتارپور راہداری کے حوالے سے پاک بھارت اعلیٰ سطح کے مذاکرات چار ستمبر کو واہگہ اٹاری بارڈر کی بھارتی جانب ہوں گے۔ سفارتی ذرائع کے مطابق بھارت نے اس حوالے سے پاکستان کی پیشکش کا جواب دے دیا ہے۔

مذاکرات میں پاکستانی وفد کی قیادت ڈائریکٹر جنرل برائے جنوبی ایشیاء و سارک اور ترجمان دفتر خارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کریں گے۔ مذاکرات پاکستان کے وقت کے مطابق صبح دس بجے منعقد ہوں گے۔ دونوں ممالک کے درمیان اس پر اتفاق پایا جاچکا ہے کہ پاکستان روزانہ پانچ ہزار یاتریوں کو گوردواراہ آنے کی اجازت دے گا۔ یاتری پیدل بھی آسکیں گے جبکہ انہیں انفرادی یا گروپ کی صورت میں بھی آنے کی اجازت ہوگی۔

سفارتی ذرائع کا کہنا ہے کہ کرتارپور راہداری کے مسودے پر اس وقت 80 فیصد سے زائد اتفاق ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان کرتارپور راہداری کا اعلیٰ سطحی مذاکرات کا پہلا دور مارچ دو جبکہ دوسرا دور چودہ جولائی کو منعقد ہوا تھا۔ دونوں ممالک کے درمیان کرتارپور کے حوالے سے ٹیکنیکل ماہرین کے درمیان بھی مذاکرات کے چار دور ہوچکے ہیں۔

Post a Comment

0 Comments